MUSNAD AHMED

Search Result (24)

44)

44) سفر میں دو نمازوں کو کسی ایک کے وقت میں جمع کرنے کا بیان

Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2416

۔ (۲۴۱۶) عَنْ عَبْدِ اللّٰہِ بْنِ عَمْرٍو ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ عَنِ النَّبِیِّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم قَالَ: ((مَا أَحَدٌ مِنَ النَّاسِ یُصَابُ بِبَلَائٍ فِی جَسَدِہِ اِلَّا أَمَرَ اللّٰہُ عَزَّوَجَلَّ الْمَلَائِکَۃَ الَّذِیْنَ یَحْفَظُوْنَہُ فَقَالَ: اُکْتُبُوا لِعَبْدِی کُلَّ یَوْمٍ وَلَیْلَۃٍ مَا کَانَ یَعْمَلُ مِنْ خَیْرٍ مَا کَانَ فِی وِثَاقِی ۔ (مسند احمد: ۶۴۸۲)
سیّدناعبد اللہ بن عمرو ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ سے مروی ہے کہ نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: لوگوں میں سے جس کو بھی کوئی جسمانی تکلیف لاحق ہوتی ہے، اللہ تعالیٰ اس کی حفاظت کرنے والے فرشتوں سے کہتا ہے: میرا بندہ دن اور رات میں خیر و بھلائی کے جو کام کرتا تھا، تم وہ لکھتے جاؤ، جب تک یہ میری بندھن میں رہے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2417

۔ (۲۴۱۷) عَنْ عِمْرَانَ بْنِ حُصَیْنٍ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ قَالَ: کَانَ بِیَ النَّاصُوْرُ فَسَأَلْتُ النَّبِیَّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم عَنِ الصَّلَاۃِ، فَقَالَ: ((صَلِّ قَائِمًا فَاِنْ لَمْ تَسْتَطِعْ فَقَاعِداً، فَاِنْ لَمْ تَسْتَطِعْ فَعَلٰی جَنْبٍ۔)) (مسند احمد: ۲۰۰۵۷)
سیّدنا عمران بن حصین ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کہتے ہیں: مجھے ناسور کی بیماری تھی، اس لیے میں نے نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم سے نماز کے بارے میں سوال کیا،آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: کھڑے ہو کر نماز پڑھ، اگر کھڑے ہونے کی طاقت نہ ہو تو بیٹھ کر پڑھ لے اور اگر بیٹھ کر بھی استطاعت نہ ہو تو پہلو کے بل لیٹ کر پڑھ لیا کر۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2418

۔ (۲۴۱۸) حدثنا عَبْدُاللّٰہِ حَدَّثَنِی أَبِی ثَنَا سُفْیَانُ عَنِ الزُّھْرِیِّ سَمِعَہُ مِنْ أَنَسِ بْنِ مَالِکٍ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ قَالَ: سَقَطَ النَّبِیُُّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم مِنْ فَرَسٍ فَجُحِشَ شِقُّہُ الْأَیْمَنُ فَدَخَلْنَا عَلَیْہِ نَعُوْدُہُ فَحَضَرَتِ الصَّلَاۃُ فَصَلّٰی قَاعِداً وَصَلَّیْنَا قُعُودًا، فَلَمَّا قَضَی الصَّلَاۃَ، قَالَ: ((اِنَّمَا جُعِلَ الْاِمَامُ لِیُؤْتَمَّ بِہِ فَاِذَا کَبَّرَ فَکَبِّرُوا وَاِذَا رَکَعَ فَارْکَعُوا، وَقَالَ سُفْیَانُ مَرَّۃً، فَاِذَا سَجَدَ فَاسْجُدُوا، وَاِذَا قَالَ: سَمِعَ اللّٰہُ لِمَنْ حَمِدَہُ فَقُوْلُوْا رَبَّنَا وَلکَ الْحَمْدُ وَاِنْ صلّٰی قَاعِدًا فَصَلُّوا قُعُودًا أَجْمَعُوْنَ۔)) (مسند احمد: ۱۲۰۹۸)
سیّدنا انس بن مالک ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ سے مروی ہے کہ نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم گھوڑے سے گر پڑے، آپ کی دائیں جانب زخمی ہو گئی، ہم آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کی عیادت کرنے کے لیے آپ کے پاس آئے، اتنے میںنماز کا وقت ہوگیا، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے بیٹھ کر نماز پڑھائی اور ہم نے بھی (آپ کی اقتداء میں) نماز بیٹھ کر پڑھی، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے جب نماز پوری کی تو فرمایا: امام اس لیے بنایا گیا ہے کہ اس کی اقتداء کی جائے، اس لیے جب وہ تکبیر کہے تو تم تکبیر کہو،جب وہ رکوع کرے، تب تم رکوع کرو، جب وہ سجدہ کرے تب تم سجدہ کرو، جب وہ سَمِعَ اللّٰہُ لِمَنْ حَمِدَہ کہے، تو تم رَبَّنَا وَلکَ الْحَمْدُ کہو اور اگر وہ بیٹھ کر نماز پڑھائے تو تم سب بیٹھ کر نماز پڑھو۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2419

۔ (۲۴۱۹) عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِاللّٰہِ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ قَالَ: صُرِعَ النَّبِیُُّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم مِنْ فَرَسٍ عَلٰی جِذْع نَخْلَۃٍ فَانْفَکَّتْ قَدمُہُ، فَدَخَلْنَا عَلَیْہِ نَعُوْدُہُ فَوَجَدْنَاہُ یُصَلِّی، فَصَلَّیْنَا بِصَلَاتِہِ وَنَحْنُ قِیَامٌ فَلَمَّا صَلّٰی قَالَ: ((اِنَّمَا جُعِلَ الْاِمَامُ لِیُؤْتَمَّ بِہِ فَاِنْ صَلّٰی قَائِمًا فَصَلُّوا قِیَامًا، وَاِنْ صَلّٰی جَالِسًا فَصَلُّوا جُلُوْسًا، وَلَا تَقُومُوا وَھُوَ جَالِسٌ کَمَا یَفْعَلُ أَھْلُ فَارِسَ بِعُظَمَائِہَا۔)) (مسند احمد: ۱۴۲۵۴)
سیّدناجابر بن عبد اللہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کہتے ہیں: نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم گھوڑے سے کھجور کے ایک تنے پر گر پڑے، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کے قدم کا جوڑ اتر گیا، ہم آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کی تیمارداری کرنے کے لیے آپ کے پاس گئے، لیکن آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم (بیٹھ کر) نماز پڑھ رہے تھے، ہم بھی آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کی نماز کے ساتھ نماز پڑھنے لگ گئے، جبکہ ہم کھڑے تھے، جب آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے نماز پڑھ لی تو فرمایا: بے شک امام اس لیے بنایا گیا ہے کہ اس کی اقتداء کی جائے، اس لیے اگر وہ کھڑا ہو کر نمازپڑھے تو تم بھی کھڑے ہوکر نماز پڑھو اور اگر وہ بیٹھ کر پڑھے تو تم بھی بیٹھ کر نماز پڑھو، جب وہ بیٹھا ہو تو تم کھڑے نہ ہوا کرو، جیسے فارسی لوگ اپنے بڑوں (کی تعظیم کرتے ہوئے ان) کے ساتھ کرتے ہیں۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2420

۔ (۲۴۲۰) عَنْ عَائِشَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا أَنَّ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم دَخَلَ عَلَیْہِ النَّاسُ فِی مَرَضِہِ یَعُودُوْنَہُ فَصَلّٰی بِہِمْ جَالِسًا فَجَعَلُوا یُصَلُّوْنَ قِیَامًا فَأَشَارَ اِلَیْھِمْ أَنِِ اجْْلِسُوا، فَلَمَّا فَرَغَ قَالَ: ((اِنَّمَا جُعِلَ الْاِمَامُ لِیُؤْتَمَّ بِہِ، فَاِذَا رَکَعَ فَارْکَعُوا، وَاِذَا رَفَعَ فَارْفَعُوا، وَاِذَا صَلَّی جَالِسًا فَصَلُّوا جُلُوسًا۔)) (مسند احمد: ۲۴۷۵۴)
سیدہ عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کی بیماری کے دوران لوگ آپ عیادت کے لیے آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کے پاس آئے، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے ان کو بیٹھ کر نماز پڑھائی، جبکہ وہ کھڑے ہو کر نماز پڑھ رہے تھے، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے ان کی طرف اشارہ کیا کہ وہ بیٹھ جائیں، جب آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم فارغ ہوئے تو فرمایا: بے شک امام اس لیے بنایا گیا ہے کہ اس کی اقتداء کی جائے، اس لیے جب وہ رکوع کرے تو تب تم رکوع کرو، جب وہ رکوع سے سر اٹھائے تو تم رکوع سے سر اٹھاؤ اور جب وہ بیٹھ کر نماز پڑھے تو تم بھی بیٹھ کر نماز پڑھو۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2421

۔ (۲۴۲۱) عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِکٍ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ قَالَ: آخِرُ صَلَاۃٍ صَلَّاھَا رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم عَلَیْہِ بُرْدٌ مُتَوَشِّحًا بِہِ وَھُوَ قَاعِدٌ۔ (مسند احمد: ۱۳۲۹۳)
سیّدناانس بن مالک ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے آخری نماز اس حال میں پڑھی کہ آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم پر ایک دھاری دار چادر تھی اور آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے اس سے توشیح کر رکھی تھی اور آپ بیٹھے ہوئے تھے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2422

۔ (۲۴۲۳) عَنِ الْمُخْتَارِ بْنِ فُلْفُلٍ أَنَّہُ سَأَلَ أَنَسًا عَنْ صَلَاۃِ الْمَرِیْضِ، فَقَالَ: یَرْکَعُ وَیَسْجُدُ قَاعِدًا فِی الْمَکْتُوْبَۃِ۔ (مسند احمد: ۱۲۳۰۱)
مختار بن فلفل نے سیّدنا انس ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ سے مریض کی نماز کے بارے میں سوال کیا، انہوں نے کہا: (مریض آدمی) فرض نماز میں بیٹھ کر رکوع و سجود کرے گا۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2423

۔ (۲۴۲۳) عَنْ عُرْوَۃَ عَنْ عَائِشَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا قَالَتْ: قَالَ رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم فِی مَرَضِہِ الَّذِی مَاتَ فِیْہِ: ((مُرُوا أَبَا بَکْرٍ یُصَلِّی بِالنَّاسِ۔)) قَالَتْ عَائِشَۃُ: اِنَّ أَبَا بَکْرٍ رَجُلٌ أَسِیْفٌ فَمَتٰی یَقُوْمُ مَقَامَکَ تُدْرِکُہُ الرِّقَّۃُ۔ قَالَ النَّبِیُُّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم : ((اِنَّکُنَّ صَوَاحِبُ یُوْسُفَ، مُرُوا أَبَا بَکْرٍ فَلْیُصَلِّ بِالنَّاسِ۔)) فَصَلّٰی أَبُوبَکْرٍ وَصَلَّی النَّبِیُُّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم خَلْفَہُ قَاعِدًا۔ (مسند احمد: ۲۵۷۷۲)
سیدہ عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا بیان کرتی ہیں کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم جس بیماری میں وفات پا گئے تھے، اس میں فرمایا: ابوبکر کو حکم دو کہ وہ لوگوں کو نماز پڑھائے۔ سیّدنا عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا نے کہا: ابوبکربڑے نرم دل (اور جلد رونے والے) آدمی ہیں،جب وہ آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کی جگہ کھڑے ہوں گے تو ان پر رقت طاری ہو جائے گی۔نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: تم بھی یوسفf کی صاحبات ہو، ابوبکر کو حکم دو کہ وہ لوگوں کو نماز پڑھائے۔ پھر سیّدنا ابوبکر ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ نے نماز پڑھائی اور نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے ابوبکر ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کے پیچھے بیٹھ کر نماز پڑھی۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2424

۔ (۲۴۲۴) عَنِ ابْنِ بُرَیْدَۃَ عَنْ أَبِیْہِ قَالَ: مَرِضَ رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم فَقَالَ: ((مُرُوا أَبَا بَکْرٍ یُصَلِّی بِالنَّاسِ۔)) فَقَالَتْ عَائِشَۃُ: یَا رَسُوْلُ اللّٰہِ! اِنْ أَبِی رَجُلٌ رَقِیقٌ، فَقَالَ: مُرُوْا أَبَابَکْرٍ یُصَلِّیْ بِالنَّاسِ فَاِنَّکُنَّ صَوَاحِبَاتُ یُوْسُفَ۔)) فَأَمَّ أَبُوْبَکْرٍ النَّاسَ وَرَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم حَیٌّ۔ (مسند احمد: ۲۳۴۴۸)
سیّدنا بریدہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کہتے ہیں: رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم بیمار ہوگئے، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: ابوبکر کو حکم دو کہ وہ لوگوں کو نماز
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2425

۔ (۲۴۲۵) عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِکٍ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ قَالَ: قَدِمَ النَّبِیُُّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم الْمَدِیْنَۃَ وَھِیَ مَحَمَّۃٌ فَحُمَّ النَّاسُ، فَدَخَلَ النَّبِیُّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم الْمَسْجِدَ وَالنَّاسُ قْعُودٌ یُصَلُّوْنَ، فَقَالَ النَّبِیُُّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم : ((صَلَاۃُ الْقَاعِدِ نِصْفُ صَلَاۃِ الْقَائِمِ۔)) فَتَجَشَّمَ النَّاسُ الصَّلَاۃَ قِیَامًا۔ (مسند احمد: ۱۲۴۲۲)
سیّدنا انس بن مالک ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کہتے ہیں کہ نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم مدینہ میں آئے، جبکہ یہ بخار والی جگہ تھی، اس لیے لوگ بیمار ہوگئے، جب نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم مسجد میں تشریف لائے اور دیکھا کہ لوگ مسجد میں بیٹھ کر نماز پڑھ رہے ہیں تو آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: (اجر کے لحاظ سے) بیٹھنے والے کی نماز کھڑے ہونے والے کی نماز کی نصف ہے۔ پس لوگوں نے مشقت کے ساتھ کھڑے ہوکر نماز پڑھنی شروع کردی۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2426

۔ (۲۴۲۶) وَعَنْہُ أَیْضًا قَالَ: خَرَجَ رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم عَلٰی نَاسٍ وَھُمْ یُصَلُّوْنَ قُعُودًا مِنْ مَرَضٍ، فَقَالَ: ((اِنَّ صَلَاۃَ الْقَاعِدِ عَلٰی النِّصْفِ مِنْ صَلَاۃِ الْقَائِمِ)) (مسند احمد: ۱۳۲۶۹)
اور انہی سے مروی ہے کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم لوگوں کے پاس تشریف لائے، جبکہ وہ بیماری کی وجہ سے بیٹھ کر نماز پڑھ رہے تھے، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: بیٹھ کر نماز پڑھنے والے کو کھڑے ہو کر نماز پڑھنے والے کے مقابلے میں آدھا اجر ملے گا۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2427

۔ (۲۴۲۷) عَنْ عِمْرَانَ بْنِ حُصَیْنٍ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ قَالَ: کُنْتُ رَجُلًا ذَا أَسْقَامٍ کَثِیْرَۃٍ فَسَأَلْتُ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم عَنْ صَلَاتِیْ قَاعِدًا، قَالَ: ((صَلَاتُکَ قَاعِدًا عَلَی النِّصْفِ مِنْ صَلَاتِکَ قَاِئمًا، وَصَلَاۃُ الرَّجُلِ مُضْطَجِعًا عَلَی النِّصْفِ مِنْ صَلَاتِہِ قَاعِدًا۔)) (مسند احمد: ۲۰۱۲۸)
سیّدناعمران بن حصین ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کہتے ہیں: میں کافی ساری بیماریوں والا آدمی تھا، اس لیے میں نے رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم سے بیٹھ کر نماز پڑھنے کے بارے میں پوچھا، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: تیری بیٹھ کر پڑھی ہوئی نماز کھڑے ہوکر پڑھی ہوئی نماز سے نصف ہے اور اسی طرح آدمی کی لیٹ کر پڑھی ہوئی نماز اس کی بیٹھ کر پڑھی ہوئی نماز سے آدھی ہے۔ یعنی اجر و ثواب کے لحاظ سے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2428

۔ (۲۴۲۸) عَنْ عَبْدِاللّٰہِ بْنِ شَقِیْقٍ قَالَ: کُنْتُ شَاکِیًا بِفَارِسَ فَکُنْتُ أُصَلِّی قَاعِدًا، فَسَأَلْتُ عَنْ ذٰلِکَ عَائِشَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا ، فَقَالَتْ: کَانَ رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم یُصَلِّی لَیْلًا طَوِیْلًا قَائِمًا وَلَیْلًا طَوِیْلًا قَاعِدًا، فَاِذَا قَرَأَ قَائِمًا رَکَعَ أَوْ خَشَعَ قَائِمًا، وَاِذَا قَرَأَ قَاعِدًا رَکَعَ قَاعِدًا۔ (مسند احمد: ۲۵۱۹۵)
عبد اللہ بن شقیق کہتے ہیں: میں فارس میں بیمار ہوگیا تھا، اس لیے میں بیٹھ کر نماز پڑھا کرتا تھا، جب میں نے اس کے متعلق سیدہ عائشہ صدیقہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا سے دریافت کیا تو انہوں نے کہا:رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم لمبی رات تک کھڑے ہو کر اور لمبی رات تک بیٹھ کر نمازپڑھتے تھے، جب آپ کھڑے ہوکر قراء ت کرتے تو رکوع بھی کھڑے ہو کر ہی کرتے اور جب بیٹھ کر قراء ت کرتے تو رکوع بھی بیٹھ کر کرتے تھے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2429

۔ (۲۴۲۹) عَنْ مُجَاھِدٍ أَنَّ السَّائِبَ سَأَلَ عَائِشَۃَ فَقَالَ: اِنِّی لَاأَسْتَطِیْعُ أَنْ أُصَلِّیَ اِلَّا جَالِسًا، فَکَیْفَ تَرَیْنَ؟ قَالَتْ: سَمِعْتُ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم یَقُوْلُ: ((صَلَاۃُ الرَّجُلِ جَالِسًا مِثْلُ نِصْفِ صَلَاتِہِ قَائِمًا۔)) (مسند احمد: ۲۶۴۲۸)
سائب نے سیدہ عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا سے پوچھاکہ میں بیٹھ کر ہی نماز پڑھنے کی طاقت رکھتا ہوںاب آپ کا اس کے بارے میں کیا خیال ہے؟ انہوں نے کہا: میں نے رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کو یہ فرماتے ہوئے سنا تھا: آدمی کی بیٹھ کر پڑھی ہوئی نماز کھڑے ہوکر پڑھی ہوئی نماز سے آدھی ہوتی ہے۔ یعنی اجر وثواب کے لحاظ سے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2430

۔ (۲۴۳۰) عَنْ عَبْدِاللّٰہِ بْنِ عَمْرٍو ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ رَأَیْتُ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم یُصَلِّی جَالِسًا، قُلْتُ لَہُ: حُدِّثْتُ أَنَّکَ تَقُوْلُ صَلَاۃُ الْقَاعِدِ عَلٰی نِصْفِ صَلَاۃِ الْقَائِمِ؟ قَالَ: ((اِنِّّی لَسْتُ کَمِثْلِکُمْ۔)) (مسند احمد: ۶۵۱۲)
سیّدناعبد اللہ بن عمرو کہتے ہیں: جب میں نے رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کو بیٹھ کر نماز پڑھتے ہوئے دیکھا، تو میں نے آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم سے کہا: مجھے تو بیان کیا گیا ہے کہ آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے یوں فرمایاہے کہ بیٹھ کر پڑھنے والے کی نماز کھڑے ہو کر پڑھنے والے کی نماز کی بہ نسبت آدھی ہوتی ہے؟ آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: میں تمہاری طرح کا نہیں ہوں۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2431

۔ (۲۴۳۱) عَنِ السَّائِبِ بْنِ عَبْدِاللّٰہِ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ عَنِ النَّبِیِّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم قَالَ: ((صَلَاۃُ الْقَاعِدِ عَلَی النِّصْفِ مِنْ صَلَاۃِ الْقَائِمِ۔)) (مسند احمد: ۱۵۵۸۶)
سیّدنا سائب بن عبد اللہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ بیان کرتے ہیں کہ نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: بیٹھ کر پڑھنے والے کی نماز کھڑے ہو کر پڑھنے والے کی نماز سے (اجر و ثواب میں) آدھی ہوتی ہے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2432

۔ (۲۴۳۲) وَعَنْہُ أَیْضًا قَالَ: دَخَلْتُ عَلٰی عَائِشَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا فَحَدَّثَتْنَا أَنَّ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم قَالَ: ((صَلَاۃُ الْقَاعِدِ عَلَی النِّصْفِ مِنْ صَلَاۃِ الْقَائِمِ۔)) (مسند احمد: ۲۴۸۲۹)
سیّدنا سائب ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ سے یہ بھی مروی ہے وہ کہتے ہیں: میں سیدہ عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا کے پاس گیا،انہوں نے مجھے بیان کیا کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: بیٹھ کر پڑھنے والے کی نماز کھڑے ہوکر پڑھنے والے کی نماز سے آدھی ہے ۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2433

۔ (۲۴۳۳) عَنْ عَائِشَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا قَالَتْ: کَانَ رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم یُصَلِّی کَثِیْرًا مِنْ صَلَاتِہِ وَھُوَ جَالِسٌ۔ (مسند احمد: ۲۵۳۴۴)
سیدہ عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا کہتی ہیں کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم زیادہ تر بیٹھ کر نماز پڑھا کرتے تھے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2434

۔ (۲۴۳۴) عَنْ أُمِّ سَلَمَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا قَالَتْ: وَالَّذِی تَوَفّٰی نَفْسَہُ! تَعْنِی النَّبِیَّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم مَا تُوُفِّیَ حَتّٰی کَانَتْ أَکْثَرُ صَلَاتِہِ قَاعِدًا اِلَّا الْمَکْتُوْبَۃَ، وَکَانَ أَعْجَبُ الْعَمِلِ اِلَیْہِ الَّذِی یَدُوْمُ عَلَیْہِ الْعَبْدُ وَاِنْ کَانَ یَسِیْرًا۔ (مسند احمد: ۲۷۱۳۴)
سیدہ ام سلمہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا کہتی ہیں: اس ذات کی قسم جس نے نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کو فوت کیا!آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم اس وقت تک فوت
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2435

۔ (۲۴۳۵) عَنْ أَبِی ھُرَیْرَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ‌ قَالَ: کَانَ رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم یُصَلِّی قَائِمًا وَقَاعِدًا وَحَافِیًا وَمُنْتَعِلًا (زَادَ فِی رِوَایَۃٍ) وَیَنْفَتِلُ عَنْ یَمِیْنِہِ وَعَنْ یَسَارِہِ۔ (مسند احمد: ۷۳۷۸)
سیّدنا ابوہریرہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کھڑے ہوکر اور بیٹھ کر نماز پڑھتے اور اسی طرح ننگے پاؤں بھی نماز پڑھتے اور جوتیاں پہن کر بھی اور (نماز سے فارغ ہو کر) دائیں جانب بھی پھر جاتے اوربائیں جانب بھی۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2436

۔ (۲۴۳۶) عَنْ ھِشَامِ بْنِ عُرْوَۃَ عَنْ أَبِیْہِ عَنْ عَائِشَۃَ زَوْجِ النَّبِیِّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم وَرَضِیَ عَنْہَا أَنَّہَا أَخْبَرَتْہُ أَنَّہَا لَمْ تَرَ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم یُصَلِّیْ صَلَاۃَ اللَّیْلِ قَاعِدًا حَتّٰی أَسَنَّ، فَکَانَ یَقْرَأُ قَاعِدًا حَتّٰی اِذَا أَرَادَ أَنْ یَرْکَعَ قَامَ فَقَرَأَ نَحْوًا مِنْ ثَـلَاثِیْنَ أَوْ أَرْبَعِیْنَ آیَۃً ثُمَّ رَکَعَ۔ (مسند احمد: ۲۵۹۶۲)
زوجہ ٔ رسول سیدہ عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا کہتی ہیں: میں نے نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کو کبھی بھی رات کو بیٹھ کر نماز پڑھتے ہوئے نہیں دیکھا تھا، حتیٰ کہ آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم عمر رسیدہ ہوگئے، پھر آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم بیٹھ کر قراء ت کرتے ، جب رکوع کا ارادہ کرتے تو کھڑے ہوجاتے اور تیس چالیس یا آیتوں کی تلاوت کر کے رکوع کر تے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2437

۔ (۲۴۳۷)(وَعَنْہَا مِنْ طَرِیْقٍ ثَانٍ) اِنَّ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کَانَ یُصَلِّی جَالِسًا فَیَقْرَأُ وَھُوَ جَالِسٌ، فَاِذَا بَقِی عَلَیْہِ مِنْ قِرَائَ تِہِ مَا یَکُوْنُ ثَـلَاثِیْنَ أَوْ أَرْبَعِیْنَ آیَۃً قَامَ فَقَرَأَ وَھُوَ قَائِمٌ ثُمَّ رَکَعَ ثُمَّ سَجَدَ، ثُمَّ یَفْعَلُ فِی الرَّکْعَۃِ الثَّانِیَۃِ مِثْلَ ذَلِکَ۔ (مسند احمد: ۲۵۹۶۳)
(دوسری سند) رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم بیٹھ کر نماز پڑھتے، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم بیٹھ کر قراء ت کرتے رہتے،جب تیس یا چالیس آیتیں باقی رہ جاتیں تو کھڑے ہو جاتے، پھر یہ قراء ت کر کے رکوع و سجود کرتے، پھر دوسری رکعت میں بھی اسی طرح کرتے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2438

۔ (۲۴۳۸) عَنْ عَبْدِاللّٰہِ بْنِ شَقِیْقٍ أَنْ عَائِشَۃَ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا قَالَتْ: کَانَ رَسُوْلُ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم اِذَا صَلّٰی قَائِمًا رَکَعَ قَائِمًا، وَاِذَا صَلّٰی قَاعِدًا رَکَعَ قَاعِدًا۔ (مسند احمد: ۲۵۳۲۰)
سیدہ عائشہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا کہتی ہیں کہ رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم جب کھڑے ہو کر نماز پڑھتے تو رکوع بھی کھڑے ہو کر کرتے اور جب بیٹھ کر نماز پڑھتے تو رکوع بھی بیٹھ کر کرتے تھے۔
Share Ravi Bookmark Report

حدیث نمبر 2439

۔ (۲۴۳۹) عَنْ حَفْصَۃَ زَوْجِ النَّبِیِّ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم وَرَضِیَ عَنْھَا أَنَّھَا قَالَتْ: لَمْ أَرَ رَسُوْلَ اللّٰہِ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم یُصَلِّی فِی سُبْحَتِہِ جَالِسًا قَطُّ حَتّٰی اِذَا کَانَ قَبْلَ مَوْتِہِ بِعَامٍ أَوْ بِعَامَیْنِ فَکَانَ یُصَلِّی فِی سُبْحَتِہِ جَالِسًا وَیَقْرَأُ السُّوْرَۃَ فَیُرَتِّلُہَا حَتّٰی تَکُوْنَ أَطْوَلَ مِنْ أَطْوَلَ مِنْہَا۔ (مسند احمد: ۲۶۹۷۳)
زوجۂ رسول سیدہ حفصہ ‌رضی ‌اللہ ‌عنہا کہتی ہیں: میں نے کبھی بھی رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم کو بیٹھ کر نفلی نماز پڑھتے ہوئے نہیں دیکھا تھا، البتہ وفات سے ایک یا دو سال پہلے آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے بیٹھ کر نماز پڑھنا شروع کر دی تھی، آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم ایک سورت کی تلاوت کرتے اور اس کو اتنا ٹھہر ٹھہر کر پڑھتے کہ وہ لمبی سے لمبی تر ہو جاتی تھی۔

آیت نمبر